Ukarian and Rusia talk

امن مذاکرات ختم ہوتے ہی روسی مذاکرات کار کا کہنا ہے کہ یوکرین کے ساتھ ‘بامعنی’ مذاکرات ہوئے

eAwaz آس پاس

جیسا کہ روسی اور یوکرائنی مذاکرات کاروں نے منگل کو استنبول میں دو ہفتوں سے زائد عرصے میں پہلی براہ راست امن بات چیت کا انعقاد کیا، روسی چیف مذاکرات کار ولادیمیر میڈنسکی نے کہا ہے کہ ان مذاکرات میں ایک "بامعنی بات چیت” ہوئی ہے اور یوکرین کی تجاویز روسی صدر ولادیمیر پوٹن کو پیش کی جائیں گی۔

ایک پریس کانفرنس کے دوران میڈنسکی نے اعلان کیا کہ مذاکرات کا پہلا دن "تعمیری” ہے۔
بات چیت کے دوران یوکرین کے مذاکرات کاروں نے ایک بین الاقوامی معاہدے کا مطالبہ کیا جس کے تحت دوسرے ممالک یوکرین کی سلامتی کے ضامن کے طور پر کام کریں گے۔