7 countries including Pakistan are suffering from severe currency crisis

پاکستان سمیت 7 ممالک شدید کرنسی بحران کا شکار

eAwaz آس پاس

جاپانی مالیاتی ادارہ نومورا نے خبردار کیا ہے کہ پاکستان سمیت 7 ممالک شدید کرنسی بحران کا شکار ہیں۔

رپورٹ کے مطابق جاپانی مالیاتی ادارے نومورا نے معیشت کے بارے میں منفی صورتحال کا حوالہ دیا ہے اور اس کے مطابق پاکستان سمیت مصر، رومانیہ، سری لنکا، ترکیہ، جمہوریہ چیک اور ہنگری شدید کرنسی بحران کا شکار ہیں۔

جاپانی کمپنی کا کہنا ہے کہ رواں سال مئی سے لے کر اب تک 32 میں سے 22 ممالک نے اندرونی خطرات سے دوچار ہیں، جن میں جمہوریہ چیک اور برازیل سرفہرست ہیں۔

32 ممالک کے اندرونی خطرات کا مجموعی اسکور مئی میں ایک ہزار 744 تھا جو بڑھ کر 2ہزار 234 تک پہنچ گیا ہے۔

یہ اسکور جولائی 1999 کے بعد سب سے زیادہ تعداد ہے اور ایشیائی بحران کے دوران یہ اسکور جلد ہی 2 ہزار 692 تک پہنچنے کا امکان ہے، نومورا اقتصادی ماہرین نے ابھرتی ہوئی کرنسیوں کو خطرے کی علامت قرار دیا۔

یہ ماڈل کسی بھی ملک کے بین الاقوامی ذخائر، شرح مبادلہ، مالیاتی صحت اور مجموعی اسکور دینے کے لیے شرح سود پر 8 اہم اشاریوں کو ظاہر کرتا ہے۔

1996 سے لے کر اب تک 61 ابھرتی ہوئی کرنسیوں کے بحران کے اعدادوشمار کی بنیاد پر جاپانی کمپنی کا اندازہ ہے کہ ایسے ممالک جن کا اسکور 100 سے زیادہ ہے وہاں اگلے 12 ماہ میں کرنسی بحران کے 64 فیصد امکانات ہیں۔

رواں سال مصر میں 2 بار کرنسی کی قدر میں بہت زیادہ کمی ہوئی ہے جس کی وجہ سے مصر نے بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے پروگرام سے رابطہ کیا، جس کے بعد مصر کا اسکور 165 تک پہنچ گیا۔

اس کے علاوہ رومانیا کا اسکور 145 ہے، سری لنکا اور ترکیہ کا اسکور138 ہے جبکہ جمہویہ چیک، پاکستان اور ہنگری بالترتیب 126، 120 اور 100 نمبر پر ہیں۔